مردوں کو جائفل والا دودھ کیوں پینا چاہیے؟

جائفل والا دودھ

جائفل کا دودھ طاقت کی کنجی سمجھا جاتا ہے۔ مردوں کو یہ دودھ ہفتے میں ایک سے دو مرتبہ لازمی پینا چاہیے۔ اس حوالے سے معروف حکیم بھی اپنی رائے دیتے ہوئے کہتے ہیں کہ: ” جائفل میں مردوں کی طاقت کا ایک بہترین خزانہ چھپا ہے۔ جو ان کو جسمانی و دماغی مسائل سے بھی بچاتا ہے

اور دماغ کو تقویت بھی دیتا ہے۔ ”جائفل میں پروٹین، سٹارچ، مخصوص مقدار میں آئل، میوسیلیج، لگننز، فینائل پروپینوائڈز اور دیگر معدنیاتی مرکبات پائے جاتے ہیں جو اس کو ہماری صحت کے لیے فائدے مند بناتے ہیں۔ یہ صرف کھانوں کو مزیدار ہی نہیں بناتا بلکہ اس میں قدرت نے صحت کے کچھ راز بھی رکھے ہیں۔ ویسے تو جائفل کو توڑنے کے بعد پیس کر پاؤڈر کی شکل میں استعمال کیا جاتا ہے۔ لیکن اگر صرف ایک ثابت جائفل کو کمرے یا اپنے بیگوں اور کیبنٹس وغیرہ میں رکھیں تو یہ کیڑے مکوڑے کو بھگانے کا کام بھی کرتا ہے۔٭ جائفل کی تاثیر چونکہ گرم ہے۔ اس لیے یہ مرد حضرات کی صحت کے لیے موزوں سمجھی جاتی ہے۔

اس کو گرم دودھ میں پکا کر استعمال کریں یا نیم گرم دودھ میں آدھا چمچ جائفل کا پاؤڈر مکس کرکے پی لیں:آج ہم آپ کو بتاتے ہیں کہ مرد حضرات کو جائفل کا دودھ پینے سے کیا کیا فائدے حاصل ہوتے ہیں ٭ وہ لڑکے جن کی داڑھی دیر سے آئے یا ان کے بال کم ہوں وہ یہ دودھ روزانہ رات سونے سے قبل استعمال کریں۔ اس سے ان کی نشوونما بھی اچھی ہوگی اور جسمانی تھکن بھی کم ہوگی۔٭ مرد حضرات چونکہ دن بھر کام کرتے ہیں اور صرف رات کے وقت ہی آرام کرتے ہیں ان کو طاقت کی ضرورت ہوتی ہے، ان کے لیے بھی یہ دودھ فائدے مند ہے۔٭ نظامِ ہاضمہ کے مسائل مردوں میں اکثر اس لیے زیادہ ہوتے ہیں کیونکہ وہ بے وقت کھانا کھاتے ہیں

اور کھانے کے فوری بعد بیٹھ کر کام کرتے ہیں جس کی وجہ سے ان کا پیٹ پھولا پھولا ہو جاتا ہے یا واش روم نہ ہونے کا مسئلہ ہوتا ہے۔ ان کے لیے یہ دودھ کارآمد ہوتا ہے۔٭ مرد حضرات کو بھی اندرونی صحت کے کئی قسم کے مسائل ہوتے ہیں، ان تمام میں یہ دودھ فائدے مند ہے۔٭ بلوغت کو پہنچتے لڑکوں کے چہرے اور کمر پر موٹے پیپ نما دانے زیادہ نکلتے ہیں۔ وہ ٹھنڈے دودھ میں جائفل کا پاؤڈر مکس کرکے پیئیں۔ چہرے پر جائفل کا پاؤڈر ٹھنڈے پانی میں مکس کرکے لیپ بنا کر لگائیں۔ ان کی رنگت بھی نکھرے گی اور چہرے کے دانے بھی ختم ہو جائیں گے۔

Leave a Comment